چنا منا

دھوبی کی بیوی سے ملکہ سلطنت نے پوچھا کہ تم آج اتنی خوش کیوں ہو۔ دھوبی کی بیوی نے کہا کہ آج چنا منا پیدا ہوا ہے۔ ملکہ نے اسکو مٹھائی پیش کرتے ہو کہا ماشاء اللہ پھر تو یہ لو مٹھائی کھاو چنا منا کی پیدائش کی خوشی میں۔

اتنے میں بادشاہ بھی کمرے میں داخل ہوا۔ تو ملکہ کو خوش دیکھا پوچھا ملکہ عالیہ آج آپ اتنی خوش کیوں ہے کوئی خاص وجہ۔ ملکہ نے کہا سلطان یہ لے مٹھائی کھائیں آج چنا منا پیدا ہوا ہے۔اسلیئے خوشی کے موقع پہ خوش ہونا چاہیے….

بادشاہ کو بیوی سے بڑی محبت تھی۔ بادشاہ نے دربان کو کہا کہ مٹھائی ہمارے پیچھے پیچھے لے آو۔
بادشاہ باہر دربار میں آیا۔بادشاہ بہت خوش تھا۔ وزیروں نے جب بادشاہ کو خوش دیکھا تو واہ واہ کی آوازیں سنائی دینے لگی کہ ظل الہی مزید خوش ہولے۔ظل الہی نے کہا سب کو مٹھائی بانٹ دو۔ مٹھائی کھاتے ہوئے بادشاہ سے وزیر نے پوچھا بادشاہ سلامت یہ آج مٹھائی کس خوشی میں آئی ہے۔ بادشاہ نے کہا کہ آج چنا منا پیدا ہوا ہے۔

ایک مشیر نے چپکے سے وزیر اعظم سے پوچھا کہ وزیرباتدبیر ویسے یہ چنا منا ہے کیا شے..؟ وزیراعظم نے مونچھوں کو تاو دیتے ہوئے کہا کہ مجھے تو علم نہیں ہے کہ یہ چنا منا ہے کیا بلا، بادشاہ سے پوچهتا ہوں۔

وزیر اعظم نے ہمت کرکہ پوچھا کہ بادشاہ سلامت ویسے یہ چنا منا ہے کون۔بادشاہ سلامت تھوڑا سا گھبرائے اور سوچنے لگے کہ واقعی پہلے معلوم تو کرنا چاہیے کہ یہ چنا منا ہے کون۔بادشاہ نے کہا مجھے تو علم نہیں کہ یہ چنا منا کون ہے… ۔ میری تو بیوی خوش تهی آج بہت خوشی کی وجہ پوچھی تو اس نے کہا کہ ٓآج چنا منا پیدا ہوا ہے اسلیئے میں اسکی خوشی کی وجہ سے خوش ہوا۔

بادشاہ گھر آیا اور بیوی سے پوچھا….ملکہ عالیہ یہ چنا منا کون تھا جس کی وجہ سے آپ اتنی خوش تھی اور جس کی وجہ سے ہم خوش ہیں۔ ۔ ملکہ عالیہ نے جواب دیا کہ مجھے تو علم نہیں کہ چنا منا کون ہے۔ یہ تو دھوبی کی بیوی بڑی خوش تھی کہ آج چنا منا پیدا ہوا ہے اسلیئے میں خوش ہوں۔میں بھی اسکی خوشی میں شریک ہوئی۔

دھوبی کی بیوی کو بلایا گیا کہ تیرا ستیاناس ہو یہ بتا کہ یہ چنا منا کون ہے جس کی وجہ سے ہم نے پوری سلطنت میں مٹھائیاں بانٹی۔!
دھوبی کی بیوی نے کہا کہ چنا منا ہماری کھوتی کا بچہ ہے جو کل پیدا ہوا ہے۔ اس وجہ سے میں خوش ہو کہ بوجھ کے لیے ایک اور کھوتے کے بچے کا اضافہ ہوا ۔😂😂😂

Advertisements

پیغام قرآن

#پیغام_قرآن
Quran Lesson – Surah Al-Kahf 18, Verse 50, Part 15

اور (وہ واقعہ یاد کرو) جب ہم نے فرشتوں سے کہا کہ آدم کو سجدہ کرو تو ابلیس کے سوا سب نے اسے سجدہ کیا۔ وہ جنوں سے تھا اس لئے اپنے پروردگار کے حکم سے سرتابی کی۔ کیا تم مجھے چھوڑ کر اسے اور اس کی اولاد کو اپنا دوست بناتے ہو، حالانکہ وہ تمہارا دشمن ہے ؟ یہ کیسا برا بدل ہے جسے ظالم لوگ اختیار کر رہے ہیں۔

#Quran #DailyQuran #Darussalam