Image

Kuch Dil Se – کچھ دل سے ღ

تقسیم کار کا اصول…
قران کے مطابق خاندانی تنظیم کا ایک اصول یہ ہے کہ عورت بنیادی طور پر گھر کے داخلی نظام کو سنبھالے اور مرد بنیادی طور پر معاش کی فراہمی کا ذمہ دار ہو..
یہ بات قران میں اس طرح بتائی گئی ہے.. مرد عورتوں کے اوپر قوام ہیں , اس بنا پر کہ اللہ نے ایک کو دوسرے پر فضیلت دی ہے اور اس بنا پر کہ مرد نے اپنے مال خرچ کیے.. ( النساء 34)
اس ایت میں فضیلت کا لفظ امتیاز کے معنیٰ میں نہیں ہے بلکہ وہ مزید استعداد (Additional Quality) کے معنیٰ میں ہیں.. اس کا مطلب یہ ہے کہ تخلیقی نقشے کے مطابق مرد کو جسمانی طور زیادہ مضبوط بنایا گیا ہے.. وہ سختیوں کو سہنے کی زیادہ صلاحیت رکھتا ہے..
مرد کے اندر یہ اضافی صلاحیت اس لیے رکھی گئی ہے کہ وہ معاشی جدوجہد کی مشکلات کو برداشت کرے.. تخلیقی نقشے کے مطابق عورت کا کام بنیادی طور پر گھر کے داخلی نظام کو سنبھالنا ہے.. اسے اگلی نسل کے لیے افراد تیار کرنا ہیں.. اس بنا پر عورت کے اندر نرمی اور انفعالیت رکھی گئی ہے.. اگر عورت اور مرد دونوں اس تخلیقی راز کو سمجھیں اور اپنے اپنے دائرے میں اپنی صلاحتیوں کو استمعال کریں تو گھر کے اندر کا نظام اور گھر کے باہر کا نظام یکساں طور پر کامیابی سے چلے گا..

موجودہ زمانے کی سب سے بڑی ٹریجڈی یہی ہے کہ عورت اور مرد دونوں گھر کے باہر کے کام سنبھالنے کے لیے دوڑ پڑے.. اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ باہر کی دنیا میں مصنوعی طور پر بےروزگاری کا مسلہ پیدا ہوا.. دوسری طرف عورتیں اپنے گھروں سے باہر نکل ائیں اور انہوں نے اپنی ذمہ داریوں کو چھوڑ دیا.. فطرت کے نظام کو توڑنے کا نتیجہ نہایت بری شکل میں نکلا.. عورتوں کے باہر نکلنے سے کوئی تعمیری کام نہ ہوسکا اور دوسری طرف گھر بھی اجڑ کر رہ گیا..

ضرورت ہے کہ اس معاملے میں ازسرنو غور کیا جائے اور سمجھا جائے کہ زندگی کی تشکیل کا فطری نظام کیا ہے……
مولانا وحیدالدین خان. from Kuch Dil Se – کچھ دل سے ღ http://ift.tt/2ec2eJU
via IFTTT

Advertisements

Leave a Reply

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s